ہمیں فالو کریں
جنرل۔

متحدہ عرب امارات کی صومالیہ میں خشک سالی سے متاثرہ افراد میں خوراک کی اشیاء کی تقسیم جاری ہے

منگل 04/10/2022

متحدہ عرب امارات کی امدادی کوششوں نے، صومالیہ میں خشک سالی سے متاثرہ 2.5 ملین سے زیادہ باشندوں کی ضروریات کو پورا کرتے ہوئے صومالی عوام کو مدد فراہم کرنے کا سلسلہ جاری رکھا ہوا ہے۔

امارات ریڈ کریسنٹ اتھارٹی، زید چیریٹیبل اینڈ ہیومینٹیرین فاؤنڈیشن، اور خلیفہ بن زید النہیان فاؤنڈیشن فار ہیومینٹیرین ورکس ،کی نمائندگی کرنے والے متحدہ عرب امارات کے امدادی اداروں کے تعاون سے گزشتہ ماہ 1000 ٹن سے زیادہ خوراک اور امدادی سامان لے کر یو اے ای کا امدادی جہاز دارالحکومت موغادیشو کی بندرگاہ پر پہنچا تھا۔

گزشتہ ہفتے کے دوران، خشک سالی کی وجہ سے امداد کی تقسیم کو وسعت دی گئی، اور ان میں بے گھر ہونے والے اور سب سے زیادہ متاثرہ علاقوں کے لیے خوراک کی امداد شامل تھی جن میں موغادیشو کے کیمپ اور ہیریشابیل کے علاقے میں ہیران گورنریٹ کے مہاس اور متابان علاقے بھی  شامل تھے۔یہ متحدہ عرب امارات کی امدادی ایجنسیوں اور صومالی ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی کی ہم آہنگی اور تعاون سے ہوا ہے۔

صومالیہ قرن افریقہ کے ان ممالک میں سے ایک ہے جو اس وقت خشک سالی سے سب سے زیادہ متاثر ہوا ہے۔

صومالیہ کو درپیش یہ خشک سالی کا بحران کئی دہائیوں میں سے بدترین ہے، اور اس کے لیے بین الاقوامی تنظیموں کی جانب سے اس بات کی اشد ضرورت ہے کہ وہ خشک سالی کو قحط میں تبدیل ہونے سے روکنے کے لیے انسانی ہمدردی کی کوششوں کو تیز کریں۔

اقوام متحدہ کی عالمی موسمیاتی تنظیم نے پیش گوئی کی ہے کہ اس سال بھی ملک کو مسلسل پانچویں ناکام بارشوں کے موسم کا سامنا کرنا پڑے گا۔

اقوام متحدہ کے دفتر برائے رابطہ برائے انسانی امور کے اندازوں کے مطابق،70 لاکھ سے زیادہ صومالیوں کو اس وقت مشکل انسانی حالات کا سامنا ہے،اور انہیں خوراک کی امداد کی اشد ضرورت ہے۔

ٹول ٹپ