ہمیں فالو کریں
جنرل۔

متحدہ عرب امارات نےپہلےکام کےدن 2022-2023 اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی مدت کےلیے 'مضبوط یونائیٹڈ' وعدوں کا اعلان کیا

بدھ 05/1/2022

متحدہ عرب امارات نے 2022 سے 2023 تک اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں اپنی مدت کےلیےاپنے "مضبوط متحدہ" وعدوں کا اعلان کیا۔ یہ وعدے، جن میں امن کا تحفظ، شمولیت کوآگےبڑھانا، لچک پیدا کرنا، اورجدت طرازی کوفروغ دینا شامل ہے، اپنی مدت کےدوران سلامتی کونسل اوراقوام متحدہ کےرکن ممالک کےساتھ متحدہ عرب امارات کی مصروفیت کی رہنمائی کریں گے۔

اقوام متحدہ میں متحدہ عرب امارات کی مستقل نمائندہ، لانا نسیبہ نےکہا، "اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں متحدہ عرب امارات کا طرزعمل اس بات کی عکاسی کرے گا کہ ہم ایک ملک اورعوام کےطورپرکون ہیں -

روادار، جامع اوراس یقین کےپابند کہ ہم متحد ہیں۔"سفارتکاری مکالمےکےمعنی ہیں متنوع نظریات کی تلاش، اوراتفاق رائےکی طرف راستہ طےکرنا۔ ہم نظریات کی ہم آہنگی اورکونسل کی متفقہ آوازکی تلاش کریں گےتاکہ اس کےفیصلوں کو وسیع ترممکنہ حمایت حاصل ہو۔ ہم کونسل اوراقوام متحدہ کی وسیع رکنیت پر اپنےساتھیوں کےساتھ مل کرتعلقات بنانے، کثیرالجہتی کو مضبوط بنانےاورکونسل کےمینڈیٹ کوپورا کرنےکےمنتظرہیں۔"

سلامتی کونسل کےایک منتخب رکن کےطورپر، متحدہ عرب امارات کونسل کےمینڈیٹ کو بہتر طریقےسے انجام دینےکےلیےاراکین کےدرمیان ہم آہنگی کےشعبوں کی نشاندہی کرنےکےلیے پرعزم ہے۔ متحدہ عرب امارات کونسل میں نہ صرف ایک عرب آواز کےطور پر بلکہ اقوام متحدہ کی وسیع تررکنیت کےلیےایک آوازکےطورپربھی کام کرے گا۔ اس عزم میں علاقائی تنظیموں جیسے کہ عرب ریاستوں کی لیگ اورافریقی یونین کےساتھ بہتر تعاون شامل ہے۔

متحدہ عرب امارات نےسلامتی کونسل میں خواتین، امن و سلامتی، موسمیاتی تبدیلی، اورامن کو فروغ دینے کے لیےٹیکنالوجی کےاستعمال سمیت کراس کٹنگ کےمسائل کو چیمپیئن کرنےکا بھی وعدہ کیا ہے۔متحدہ عرب امارات کونسل میں انسداد دہشت گردی اورکوویڈ 19 کے ردعمل اوربحالی سمیت متعدد دیگرمسائل پر بھی توجہ دے گا۔

اپنی دو سالہ مدت کےدوران، متحدہ عرب امارات دومرتبہ، مارچ 2022 اورجون 2023 میں، سلامتی کونسل کےصدرکےطورپر کام کرے گا۔سلامتی کونسل کا صدرجو ہرماہ تبدیل ہوتا ہے، کونسل کا ایجنڈا طےکرتا ہےاورکونسل کی قائمہ کمیٹیوں کی سربراہی کرتا ہے۔

ٹول ٹپ